کیفین چھوڑنے کے بے شمار فوائد

ہر بدلتے وقت اور دوڑتی بھاگتی زندگی کے ساتھ کیفین پر مشتمل مشروبات کے استعمال میں اضافہ ہوتا جا رہا ہے، جہاں کیفین کے استعمال کےفوائد ہیں وہیں اسے ترک کرنے کی صورت میں بھی مجموعی صحت پر مثبت اثرات آتے ہیں۔

ماہرین غذائیت کے مطابق کیفین یعنی چائے، کافی، چاکلیٹ کے استعمال کے بہت سے فوائد ہیں جن میں میٹابالزم کا صحیح طریقے سے کام کرنا اور الزائمر کے لاحق ہونے کے امکانات میں کمی شامل ہے ۔



ماہرین کے مطابق کیفین کو اپنی روٹین سے مائنس کرنے کے نتیجے میں مندرجہ ذیل فوائد حاصل ہوتے ہیں جن میں پیسوں کی بچت بھی شامل ہے۔کیفین کے استعمال سے ہمارے اندر اچانک سے انر جی آ جاتی ہے جس کی صورت میں انسانی جسم میں موجود ’ فلائٹ اور فلائٹ‘ نامی ہارمون میں تیزی آ جاتی ہے اور ہم ذہنی اضطراب کا شکار ہو جاتے ہیں ۔

اس صورت میں خون تیزی سے جسم میں گردش کرتا ہے اور’ نروس سسٹم ‘، ہارٹ اٹیک اور پینک اٹیک کا خطرہ بڑھ جاتا ہے ۔جو افراد میں پہلے سے ہی ہائپر ٹینشن یا خون کی تیز گردش کا شکار ہیں انہیں کیفین کے استعمال سے اجتناب کرنا چاہیے۔

کیفین کا استعمال ترک کرنے سے بلڈ پریشر نارم سطح پر رہتا ہے جبکہ ایک دن میں 3 سے 5 کپ کے استعمال سے دل کے امراض کا خطرہ بڑھ جاتا ہے۔کیفین کے استعمال سے آپ کی نیند متاثر ہو سکتی ہے، رات میں اس کے استعمال سے آپ دماغی طور پر پُر سکون ہونے کے بجائے مزید جاگ سکتے ہیں، جس کے نتیجے میں جسم اور دماغ کو پر سکون ہونے میں مشکلات کا سامنا کرنا پڑتا ہے، اس صورت میں آپ رات کو نیند لے کرصبح پُر سکون اُٹھنے کے بجائے مزید تھک جاتے ہیں۔

رات میں اگر آپ کسی بھی شکل میں کیفین لینا چاہتے ہیں تو سونے سے 6 گھنٹے پہلے اس کا استعمال کر لیں۔اگر آپ کیفین کے عادی نہیں ہیں یا اس کا استعمال نہیں کرتے تو آپ کا جسم غذا میں موجود وٹامنز اور منرلز ( کیلشیم ، آئرن، وٹامن بی ) کو صحیح طریقے سے ہضم اور اس کا استعمال کرتا ہے ۔
کیفین چھوڑنے کا فائدہ خواتین کو زیادہ ہوتا ہے، اس کے استعمال کو ترک کرنے سے خواتین میں موجود ’ ایسٹروجن ‘ ہارمون کے مسائل سے چھٹکارہ مل جاتا ہے ، 2012 میں ہونے والی ایک تحقیق کے مطابق 200 ملی گرام یعنی 2 کپ چائے پینے کے نتیجے میں خصوصاً ایشیا اور سیاح فام خواتین میں ایسٹروجن کا لیول نہایت کم سطح پر پہنچ جاتا ہے جس سے بہت سے مسائل مثلاً بریسٹ کینسر، اوورئین کینسر سمیت دیگر انتہائی خطرناک مسائل جنم لے سکتے ہیں

۔ہم سب نے اکثر دوسروں سے سن رکھا ہے کہ چائے یا کافی کا کپ پیئے بغیر ان کی صبح ہی نہیں ہوتی، کیفین کا استعمال براہ راست آپ کے مزاج پر اثر انداز ہوتا ہے، تحقیق سے یہ بات ثابت ہوتی ہے کہ کیفین دماغ کے لیے کوکین جیسے نشے کا کردار ادا کرتی ہے۔

جو افراد کیفین کا استعمال نہیں کرتے وہ دوسروں کے لحاظ سے کافی ٹھنڈے مزاج کے ہوتے ہیں، اگر آپ نے بھی کافی یا چائے چھوڑنے کا سوچ لیا ہے تو اس بات کو پہلے ذہن نشین کر لیں کہ آ پ کو شروع میں مزاج سے متعلق مشکلات کا سامنا کرنا پڑ سکتا ہے ۔